Connect with us

Faiz Ahmad Faiz

Faiz Ahmad Faiz best poetry

Published

on

faiz ahmed faiz peotry

ہم ایسے سادہ دلوں کی نیاز مندی سے”
“.بتوں نے کی جہاں میں خدائیاں کیا کیا

ہم سے کہتے ہے چمن والے غریبان چمن”
“.تم کوئی اچھا سا رکھ لو اپنے ویرانے کا نام

اور بھی دکھ ہے زمانے میں محبت کے سوا”
“.راحتیں اور بھی ہیں وصل کی راحت کے سوا

آئے تو یوں کہ جیسے ہمشیہ تھے مہربان”
“.بھولے توں یوں کہ جیسے کبھی آشنا نہ تھے

تیری امید تیرا انظار جب سے ہے”
“.نہ شب کو دن سے شکائیت نہ دن کو شب سے

دل نہ امید تو نہیں ناکام ہی تو ہے”
“.لمبی ہے غم کی شام مگر شام ہی تو ہے

آپ کی یاد آتی رہی رات بھر”
“.چاندنی دل دکھاتی رہی رات بھر

امید یار نظر کا مزاج درد کا رنگ”
“.تم آج کچھ بھی نہ پوچھو کہ دل اداس بہت ہے

صبح پھوتی توآسماں پہ ترے”
رنگ رخسار کی پھوہار گری
رات چھائی تو روئے عالم پر
“.تیری زلفوں کی آبشار گری

تم آئے ہو نہ شب انظار گزری ہے”
“.تلاش میں ہے سحر بار بار گزری ہے

آواز میں ٹھرائو تھا آنکھوں میں نمی تھی”
“.اور کہہ رہا تھا میں نے سب کچھ بھلا دیا

کتنی حسرت تھی کہ انجام بدل جائے گا”
“.آخری ورک کئی بار پلٹ کے دیکھا

Continue Reading
Click to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.